IQNA

8:04 - November 06, 2018
خبر کا کوڈ: 3505317
بین الاقوامی گروپ- انڈیا کے محکمہ آثار قدیمہ کے مطابق جمعہ کے علاوہ دیگر ایام میں تاج محل کی مسجد میں نماز کی اجازت نہ ہوگی۔

ایکنا نیوز- اناطولیہ نیوز کے مطابق ٹایمز آف انڈیا لکھتا ہے : آثار قدیمہ نے ایک اعلان میں واضح کیا ہے کہ جمعہ کی نماز کے علاوہ دیگر ایام میں تاج محل کی مسجد میں نماز پر پابندی ہوگی۔

 

آثار قدیمہ کے ترجمان فاسان سواران کے اس بارے میں کہنا تھا: مذکورہ اقدام عدالتی حکم پر اٹھایا گیا ہے۔

 

روزنامہ «ٹایمز آف انڈیا» لکھتا ہے: تاج محل کی انتظامیہ نے تاج محل میں وضو خانے کا پانی بند کردیا ہے۔

 

اخبار کے مطابق تاج محل مسجد کے امام سید صادق علی نے تصدیق کی ہے کہ پانی بند کردیا گیا ہے جبکہ مسجد کی انتظامیہ کمیٹی کے رکن  ابراهیم حسین نے کہا ہے کہ سالوں سے اس مسجد میں یومیہ نماز ادا کی جارہی ہے اور اس پر پابندی کا جواز نہیں بنتا۔

 

انکا کہنا تھا: حکومت میں اسلام مخالف سوچ رکھنے والے افراد کی وجہ سے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔

 

قابل ذکر ہے کہ اس سے پہلے اعلی عدالت نے کہا تھا کہ صرف  آگرا شہر کے باشندے مذکورہ مسجد میں نماز جمعہ اور یومیہ نماز ادا کرسکتے ہیں. تاج محل عظیم اسلامی شاہکار میں شمار کیا جاتا ہے جو سال ۱۶۳۱ کو مغل بادشاہ «شاه جهان» کی جانب سے انکی اہلیہ «ممتاز محل» کی یاد میں تعمیر کی گیی ہے۔/

3761641

نام:
ایمیل:
* رایے: